ٹِک ٹوک پر کب تک پابندی عائد رہے گی، عدالت کا بڑا فیصلہ آ گیا.

پشاور ہائیکورٹ نے فیصلہ دیا ہے کہ ویڈیو شیئرنگ کی مقبول ایپلی کیشن ٹِک ٹوک پر غیر اخلاقی اور قابل اعتراض مواد کو اپلوڈ کیا جارہا ہے اس میں اخلاقی اقدار اور اخلاقیات کی خلاف ورزی کی جارہی ہے .

لہذا ملک میں پابندی اس وقت تک جاری رہے گی جب تک کہ اس کے مواد کو فلٹر کرنے کے لئے کوئی میکانزم متعارف نہیں کرایا جاتا ہے۔

ٹک ٹوک کے خلاف درخواست پر تفصیلی حکم میں ، چیف جسٹس قیصر راشد خان اور جسٹس محمد ناصر محفوز پر مشتمل بینچ نے پاکستان ٹیلی مواصلات اتھارٹی کو ہدایت کی کہ اس ملک میں چینی ساختہ ایپ پر پابندی لگائے جب تک کہ اس کے مواد کو فلٹر کرنے کے لئے کوئی میکانزم متعارف نہیں کرایا جاتا ہے۔

اس نے 6 اپریل کو ٹیلی کام ریگولیٹر سے اس سلسلے میں پیشرفت رپورٹ طلب کی اور سماعت تب تک ملتوی کردی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں