وفا کی کون سی منزل پہ اس نے چھوڑا تھا.

وفا کی کون سی منزل پہ اس نے چھوڑا تھا
کہ وہ تو یاد ہمیں بھول کر بھی آتا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں