یونیورسٹی آف لاہور نے طلبا کو کیمپس میں گلے ملنے پر نکال دیا.

جمعہ کے دن دو طلبا کو لاہور یونیورسٹی سے کیمپس میں گلے ملنے پر نکال دیا گیا تھا اور لوگوں میں اس بات پر اختلاف ہے کہ آیا یہ صحیح فیصلہ تھا یا نہیں۔
یونیورسٹی کے رجسٹرار کی جانب سے جاری بیان کے مطابق ، 12 مارچ کو صبح ساڑھے دس بجے ایک خصوصی کمیٹی کا اجلاس ہوا اور دونوں طلباء کو بلایا گیا لیکن وہ پیش ہونے میں ناکام رہے۔ اس کے بعد کمیٹی نے ان دونوں طلبا پر یونیورسٹی کے کسی بھی کیمپس میں داخلے پر پابندی لگانے کا فیصلہ کیا۔

یونیورسٹی کا کہنا ہے کہ انہوں نے اس کے عمومی نظم و ضبط کے ضابطہ اخلاق اور ضابطہ اخلاق کی دفعہ 9 کی خلاف ورزی کی۔ یہ قواعد آن لائن شائع نہیں ہوتے ہیں۔

متعدد ویڈیوز آن لائن اپ لوڈ کی گئیں۔ ان ویڈیوز میں دکھایا گیا ہے کہ ایک نوجوان خاتون نے ایک نوجوان کو گلاب اور کارڈ دیتے ہوئے اور پھر اس سے گلاب کا گلدستہ تھام لیا اور پھر اسے گلے لگا کر گھسیٹتا ہے۔ طلباء کا ہجوم جوڑے کو گھیرے میں لے کر ان کی خوشی کرتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں