سپریم کورٹ نے ای پی ٹی بی کو کرک میں تباہ شدہ ہندوؤں کے مندر کی تعمیر نو شروع کرنے کا حکم دیا ہے۔

سپریم کورٹ نے منگل کو خیبرپختونخواہ کے ضلع کرک میں ایک ہندو سنت کی صدی قدیم سمادھی (مزار) کی تعمیر نو شروع کرنے کا حکم دیا ہے جس کو دسمبر میں ایک ہجوم نے نقصان پہنچا تھا جبکہ اس بات کی ہدایت بھی کی ہے۔ بورڈ ملک بھر میں تمام فعال اور غیر فعال مندروں اور گردواروں کی تفصیلات عدالت میں پیش کرے گا۔

چیف جسٹس آف پاکستان (سی جے پی) گلزار احمد نے گذشتہ ماہ مزار پر حملے کا نوٹس لیتے ہوئے کے پی کے چیف سکریٹری اور انسپکٹر جنرل (آئی جی) نیز اقلیتوں کے حقوق سے متعلق ایک کمیشن کے سربراہ ڈاکٹر شعیب سڈل کو حکم دیا تھا۔ ، سائٹ کا جائزہ لیں اور 4 جنوری تک جامع رپورٹ پیش کریں۔

آج سماعت کے دوران چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے ای پی ٹی بی کو بھی ہدایت کی کہ وہ ملک بھر کے مندروں سے تجاوزات صاف کریں اور تجاوزات میں ملوث عہدیداروں کے خلاف کارروائی کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں