دودھ والا

گھر پر کوئی نہیں تھا دودھ والے نے گھنٹی بجائی اند سے طوطے کی آواز آئی: ”کون ہے؟“۔
دودھ والے نے کہا:”دودھ والا“۔ طوطے نے پھر پوچھا:”کون ہے؟“۔

دودھ والے نے پھر جواب دیا:”دودھ والا“۔ آخر با بار ایک ہی سوال سے تنگ آ کر دودھ والے نے پوچھا:”آخر تم کون ہو؟“۔

طوطے نے کہا:”دودھ والا“۔

اپنا تبصرہ بھیجیں